‘سیکس سے بچنے کے لیے مجھے بہانے بنانے پڑتے تھے’


GNS اس کہانی میں بالغوں کے لیے معلومات ہیں تاہم اپنی کہانی بیان کرنے والے شخص نے اپنی شناخت نہ ظاہر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ میں نے کئی راتیں روتے ہوئے گزاریں۔ مختلف ڈاکٹروں سے ملنے کے بعد میری تکلیف بڑھ گئی تھی۔ ہر لمحے میری مایوسی اور میری

This content is restricted to site members. If you are an existing user, please log in. New users may register below.

Existing Users Log In
   
Previous 'آنکھ مارنا جائز نہیں اور فلم میں یہ توہین مذہب ہے'
Next ازبکستان کے ٹی وی پر نوجوان عاشقوں کے بوس و کنار کے مناظر دکھانے پر تنقید